فیس بک پیج سے منسلک ہوں

گوادر میں آئل سٹی کا قیام : پاکستان اور سعودی عرب اگلے ماہ معاہدے پر دستخط کریں گے

اسلام آباد پالیٹکس رپورٹ /معظم رضا تبسم : پاکستان اور سعودی عرب گوادر میں آئل سٹی کے قیام کیلئے اگلے ماہ معاہدے پر دستخط کریں گے۔ سعودی وزیر شہزادہ خالد عبدالعزیز الفالح اپنے وفد کے ہمراہ گوادر کا دورہ کیا اور آئل ریفائنری کے لئے مختص علاقے کا معانئہ کیا۔

ہفتہ کو گوادر کے دورہ کے دوران وفاقی وزیر پٹرولیم غلام سرور خان اور وفاقی وزیر بحری امور سید علی حیدر زیدی کے ساتھ دونوں ممالک کے درمیان سرمایہ کاری سمیت مختلف شعبوں میں باہمی تعاون بڑھانے کیلئے مختلف معاہدوں کو حتمی شکل دینے کے حوالے سے مشاورتی اجلاس کے دوران سعودی عرب کے وزیر توانائی، صنعت و معدنی وسائل شہزادہ خالد عبدالعزیز الفالح نے کہا ہے کہ سعودی عرب پاکستان میں تاریخ کی سب سے بڑی سرمایہ کاری کرے گا، گوادر پورٹ ایک اہم خطے میں واقع ہے، پاکستان ، چین اور سعودی عرب کی دوستی اور باہمی اشتراک عالمی مثال ہوگا۔

چائینہ بزنس کمپلیکس میں منعقدہ اجلاس میں چیئرمین گوادر پورٹ اتھارٹی دوستین خان جمالدینی اور جی ڈی اے کے ڈی جی ڈاکٹر سجاد بلوچ نے وفد کو گوادر پورٹ اور ترقیاتی کاموں کے حوالے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ گوادر پاکستان کے انتہائی جنوب مغرب میں اور دنیا کے سب سے بڑے بحری تجارتی راستے پر واقع صوبہ بلوچستان کا اہم شہر ہے جو اپنے شاندار محل وقوع اور زیر تعمیر جدید ترین بندرگاہ کے باعث عالمی سطح پر معروف ہے۔

وفاقی وزیر پٹرولیم غلام سرور خان نے کہا کہ سعودی عرب کی شمولیت سے سی پیک منصوبے کی اہمیت مزید بڑھ جائے گی،پاکستان میں زراعت کے شعبے میں سرمایہ کاری کرنے کے وسیع مواقع موجود ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب کو پاکستان میں زرعی شعبے میں سرمایہ کاری کرنے کی دعوت دیتے ہیں۔

وفاقی وزیرنے کہا کہ پاکستان اور سعودی عرب گوادر میں آئل سٹی کے قیام کیلئے اگلے ماہ معاہدے پر دستخط کریں گے۔اس سے پہلے سعودی وزیر شہزادہ خالد عبدالعزیز الفالح اپنے وفد کے ہمراہ گوادر پہنچے تو ایئرپورٹ پر وفاقی وزیر پٹرولیم غلام سرورخان اور وفاقی وزیر بحری امور سید علی حیدر زیدی نے ان کا استقبال کیا۔ اس موقع پر وفاقی ایڈیشنل سیکرٹری، صوبائی وزیر ظہور بلیدی اور دیگر حکام بھی موجود تھے۔ سکول کے بچوں نے سعودی مہمان کو گلدستہ بھی پیش کیا۔