فیس بک پیج سے منسلک ہوں

چیف جسٹس پاکستان سے کرپشن کیسز والے حکومتی وزراء کےنام ای سی ایل میں شامل کرانے کا مطالبہ

اسلام آباد پالیٹکس رپورٹ / معظم رضا تبسم :پاکستان پیپلزپارٹی کے خیبر پختونخواہ اور گلگت بلتستان کے صوبائی عہدیداروں نے چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار سے استدعا کی ہے کہ پی ٹی آئی کے جن رہنماوؤں پر کیسز چل رہے ہیں ان کے نام بھی ای سی ایل میں ڈالے جائیں،پی ٹی آئی کے چیئرمین اپنے وزراءسے کہیں کہ وہ انگاروں سے نہ کھیلیں ان کے ہاتھ جل جائیں گے۔ان خیالات کا اظہار پاکستان پیپلزپارٹی خیبرپختونخوا کے صدر ہمایوں خان اور گلگت بلتستان کے صدر امجد حسین ایڈووکیٹ نے مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا،نذیر ڈھوکی بھی ان کے ہمراہ تھے۔خیبرپختونخوا کے صدر ہمایوں خان نے کہا کہ انصاف کے نام پربننے والی حکومت نا انصافیاں کر رہی ہے اور پیپلزپارٹی کی کردار کشی ہورہی ہے،ہم اس کی مذمت کرتے ہیں،جس طرح پیپلزپارٹی کے رہنماوؤں کے نام ای سی ایل میں ڈالے گئے ہیں،اس طرح پی ٹی آئی کے ان رہنماوؤں کے نام بھی ای سی ایل میں ڈالے جائیں۔انہوں نے کہا کہ عمران خان نیازی،پرویز خٹک،وفاقی وزیر فہمیدہ مرزا،وفاقی وزیر مقبول صدیقی،وفاقی وزیر زبیدہ جلال،وزیراعلیٰ محمود خان،صوبائی وزیر علیم خان اور جہانگیر ترین کے اوپر بھی انکوائریاں چل رہی ہیں،ان سب کے نام بھی ای سی ایل میں ڈالے جانے چاہئیں،تو پھر ہم کہیں گے کہ واقعی انصاف ہورہا ہے۔موجودہ حکومت کے وزیر اطلاعات آئے دن پارٹیاں تبدیل کرتے ہیں،کبھی وہ مشرف کے ساتھ ہوتے ہیں،کبھی پیپلزپارٹی کے ساتھ آجاتے ہیں اور کبھی وہ پی ٹی آئی میں چلے جاتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی نے خیبرپختونخوا میں مخالفین کو دبانے کیلئے احتساب کمیشن بنایا تھا،جس پر 80کروڑ روپے خرچ کئے گئے لیکن پھراس کو بند کردیاگیا۔الیکشن میں جو وعدے کئے وہ پورے نہیں کئے۔گلگت بلتستان کے صدر امجد حسین ایڈووکیٹ نے کہا کہ موجودہ حکومت نے عوام کو مہنگائی،بے روزگاری کے علاوہ کچھ نہیں دیا،حکومت مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے،بے نظیر بھٹو کی برسی کے موقع پر ہماری قیادت کے نام ای سی ایل میں ڈالے گئے،میں چیف جسٹس آف پاکستان سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ اس پر سوموٹو لیں،پی ٹی آئی کے جن رہنماوؤں کے اوپر کیسز چل رہے ہیں ان کا نام بھی ای سی ایل میں ڈالا جائے۔پیپلزپارٹی نے ہمیشہ عوام کی خدمت کی ہے،حکومتی وزراءانتشار پھیلا رہے ہیں اور سیاست کو گندہ کرنے کی کوشش کر رہے ہیں،موجودہ حکومت ڈکٹیٹر شپ کا نیا رول ہے،عوام کو ووٹ دینے کا موقع ملنا چاہئے،پیپلزپارٹی کے خلاف پروپیگنڈا کیا جارہاہے،ہم اس پروپیگنڈا کی مذمت کرتے ہیں،اگر ہماری قیادت پر ہاتھ ڈالنے کی کوشش کی گئی تو جیالے بھرپور جواب دیں گے اور عمران خان نیازی کے تمام عزائم خاک میںمل جائیں گے۔نذیر ڈھوکی نے کہا کہ اگر وزیراعلیٰ سندھ کا نام ای سی ایل میں ڈالا جاسکتا ہے تو وزیراعلیٰ عمران خان کا نام ای سی ایل میں کیوں نہیں ڈالا جاسکتا،کیونکہ ان پر بھی کیسز چل رہے ہیں۔وفاق کو کمزور کرنے کی ہر سازش کو ناکام بنائیں گے،پی ٹی آئی کے انڈے ابھی چوزے نہیں بنے اور سندھ حکومت کو گرانے کی بات کر رہے ہیں

٭٭٭٭٭