فیس بک پیج سے منسلک ہوں

زرداری کی ممکنہ گرفتاری, پارٹی قیادت صنم بھٹو یا بلاول بھٹو کو دینے پر منقسم رائے

اسلام آباد پالیٹکس رپورٹ/ معظم رضا تبسم سابق صدر آصف علی زرداری کی ممکنہ گرفتاری کی صورت میں پیپلز پارٹی کی قیادت صنم بھٹو کو دینے یا بلاول بھٹو کوبااختیار بنانے کے معاملے پر پارٹی میں منقسم رائے پائی جاریی ہے تاہم اس ضمن میں پیپلز پارٹی کی سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی26 دسمبر کو ہونے والے اجلاس میں حتمی غور کریگی-

ذرائع کا کہنا ہے کہ پارٹی میں یہ رائے بھی پائی جارہی ہے کہ بانی چیئرمین ذوالفقار علی بھٹو کی صاحبزادی صنم بھٹو کو پارٹی قیادت سونپنےکے بجائے بلاول بھٹو کو فیصلہ سازی کا اختیار دیا جانا زیادہ مناسب ہوگا-

پارٹی رہنماؤوں میں یہ آراء بھی پائی جا رہی ہے کہ صنم بھٹو کو سابق وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو کی صاحبزادی ہونے کے ناطے پارٹی سیاست سے الگ تو نہیں سمجھا جا سکتامگر وہ سیاست سے دور رہیں ہیں اس لئے انہیں پارٹی کی قیادت سونپنے کے بجائے بلاول بھٹو کے کردار کو پارٹی اور ملکی سیاست میں مضبوط کرنا بہتر رہیگا-

سابق وزیراعظم محترمہ بینظیر بھٹو شہید کی برسی کے موقع پر پیپلز پارٹی کی سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس 26دسمبر کو نوڈیرو ہاؤس لاڑکانہ میں طلب کیا گیا ہے آصف علی زرداری اور بلاول بھٹو کی مشترکہ صدارت میں اجلاس ہوگا-اجلاس میں ملکی سیاسی صورتحال , سابق صدرآصف علی زرداری کیخلاف سپریم کورٹ کیس اور ممکنہ گرفتاری کے تناظر میں پارٹی قیادت اور لائحہ عمل کے حوالے سےاہم فیصلے متوقع ہیں-