فیس بک پیج سے منسلک ہوں

جعلی اکاونٹس کیس میں طلبی: بلاول بھٹو کاسپریم کورٹ فیصلے پرعمل کا عندیہ

اسلام آباد پالیٹکس رپورٹ /معظم رضا تبسم : ترجمان چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی نے ان جعلی اکاونٹس کیس میں بلاول بھٹو زرداری کو طلب کئے جانے بارے جے آئی ٹی کے نوٹس سے لاعملی کا اظہار کرتے ہوئے نوٹس ملنے پر سپریم کورٹ کے احکامات پر عمل کرنیکا عندیہ دیا ہے۔ میڈیا رپورٹس میں دعوی کیا گیا تھا کہ جعلی اکاؤنٹس کیس سے متعلق کیس میں تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی نے سابق صدر آصف علی زرداری اور فریال تالپور کے علاوہ چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو کو بھی طلب کر لیا ہے۔

میڈیارپورٹس کے مطابق سپریم کورٹ کے حکم پر جعلی اکاؤنٹس کیس کی تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی نے پی پی پی کے چئیرمین بلاول بھٹو زرداری اور پیپلزپارٹی کی رہنما فریال تالپور کو 28 نومبر کو طلب کیا ہے جبکہ جے آئی ٹی نے پیپلزپارٹی پارلیمنٹرین کے سربراہ آصف علی زرداری کو بھی 29 نومبر کو طلب کیا ہے۔

ترجمان چیئرمین پیپلز پارٹی نے بلاول بھٹو زرداری کو جے آئی ٹی کی جانب سے نوٹس ملنے پر لاعلمی کا اظہار کیا ہے۔ مسطفیٰ نواز کھوکھر نے اپنے وضاحتی بیان میں کہا کہ اگر کوئی نوٹس ملا تو سپریم کورٹ کے فیصلے پر عمل کریں گے۔انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی پہلے بھی مقدمات کا سامنا کرتی رہی ہے، اب بھی کرے گی اور ہم عدالتوں میں سرخرو ہوتے رہے ہیں۔ جے آئی ٹی نے اکاؤنٹس کی تفصیلات کیلئے دبئی حکومت کو خط بھی لکھا تھا۔ واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے 7 ستمبر کو جعلی اکاؤنٹس کیس کی تحقیقات کے لیے جے آئی ٹی تشکیل دی تھی۔