فیس بک پیج سے منسلک ہوں

درانی ، عاصمہ عالمگیر،روبینہ خالد،نثارکھوڑوواہم افسران کیخلاف تحقیقات کی منظوری

اسلام آباد پالیٹکس مانیٹر : چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے13 کیسز کی انکوائریاں شروع کرنے کی منظوری دے دی، جبکہ 2 ریفرنس دائر کرنے کی بھی منظوری دی گئی ہے، نیب نے سابق وفاقی وزیر اکرم درانی، سابق صوبائی وزیرنثار کھوڑو، سابق وفاقی وزیرارباب عالمگیر، عاصمہ ارباب عالمگیر اورسینیٹر روبینہ خالد کیخلاف انکوائری کی منظوری دے دی گئی ہے۔

چیئرمین نیب کی سربراہی میں نیب ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس ہوا۔ جس میں زیرتفتیش کیسزمیں پیشرفت کا جائزہ لیا گیا اور نئے کیسز کی منظوری دی گئی۔ اجلاس میں بدعنوانی اور اختیارات کے ناجائز استعمال پر13 لوگوں کے خلاف انکوائری کی منظوری دی گئی۔ اعلامیہ نیب کے مطابق نیب نے سابق وفاقی وزیراکرم درانی کیخلاف انکوائری کی منظوری دے دی ہے۔

جن ریفرنسز کی منظوری دی گئی ہے ان میں مردان، خیبر پختونخوا کی ولی خان یونی ورسٹی کے سابق وائس چانسلر ڈاکٹر احسان اور پیپلزیونیورسٹی بے نظیر آباد کے وائس چانسلرڈاکٹر اعظم حسین ،سی ڈی اے افسر عماد حسین شاہ اور دیگر کے خلاف ریفرنس بھی شامل ہے۔

اسی طرح نیب نے سابق صوبائی وزیرنثار کھوڑو، سابق وفاقی وزیرارباب عالمگیر کیخلاف بھی انکوائری کی منظوری دے دی ہے۔اجلاس میں سینیٹر روبینہ خالد سمیت دیگر 5 افراد کیخلاف انکوائری کی منظوری دی گئی ہے۔ چیئرمین نیب کی زیرصدارت اجلاس میں بدعنوانی کے 2 ریفرنس دائرکرنے کی بھی منظوری دی گئی ہے۔ چیئرمین نیب جسٹس ر جاوید اقبال نے کہا کہ میگا کرپشن کیسز ترجیحی بنیادوں پر منطقی انجام تک پہنچائے جائیں۔ نیب کے دفاترز میں آنے والوں کا احترام کیا جائے۔احتساب سب کیلئے کی پالیسی جاری رہے گی۔