فیس بک پیج سے منسلک ہوں

دکھاوے کی ” ہلہ گلہ سیاست ” نہیں پارلیمنٹ میں عوامی مفادات کا حقیقی دفاع ، بلاول بھٹو کا فیصلہ

اسلام آباد پالیٹکس رپورٹ/معظم رضا تبسم: پاکستان پیپلزپارٹی نے پارلیمنٹ میں پارلیمانی اور جمہوری اصولوں پر مبنی پاکستان، جمہوریت اورعوام کے مفاد میں اپنی طے کردہ پالیسی کے مطابق کردار ادا کرنے کا فیصلہ کیا ہے- پیپلزپارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹوزرداری نے فیصلہ کیا ہے کہ حکومت کے پیش کردہ منی بجٹ میں عوام پر ڈالے گئے ٹیکسوں اور مہنگائی کے بوجھ سے ریلیف دلانے کے لئے پارلیمنٹ میں عوامی مفادات کا بھرپور دفاع کیا جائیگا۔ باوثوق ذرائع کے مطابق پیپلزپارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹو زرداری نے پارلیمنٹ میں قومی اور بین الاقوامی اور پارلیمانی معاملات بارے پارٹی کی طے شدہ جمہوری اور پارلیمانی اصولوں پر مبنی پالیسی کو فوقیت دینے کا فیصلہ کیا ہے تاہم پیپلزپارٹی کی کوشش ہوگی کہ قومی اور پارلیمانی امور پر دیگر سیاسی جماعتوں کو اپنا ہمنوا بنائے گی اور بصورت دیگر بھی اپنا انفرادی کردار ادا کریگی۔ ذرائع کا کہنا ہے نئی قومی اسمبلی کی تشکیل کے بعد پاکستان پیپلزپارٹی نے چئیرمین بلاول کی اسی پالیسی کے تناظر میں اپوزیشن کی بڑی پارٹی کی حثیت سے جمہوری انداز اختیار کیا اور ن لیگ کی ہنگامہ آرائی کا حصہ بننے سے گریز کیا تھا۔ ذرائع کے مطابق پیپلزپارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹو زرداری نے پارٹی کے سینئر رہنماووں سے منی بجٹ پر کٹوتی تحاریک لانے کے لئے تجاویز طلب کر لی ہیں۔ پیر کو قومی اسمبلی اجلاس سے قبل چئیرمین بلاول بھٹو کی زیر صدارت پارٹی کے پارلیمانی اجلاس میں منی بجٹ کے حوالے سے کٹوٹی تحاریک اور ایوان میں کردار کے لائحہ عمل کو حتمی شکل دی جائیگی۔