فیس بک پیج سے منسلک ہوں

غیر مرئی قوتوں کا پی ٹی آئی سے اتحاد کے لئے دباو، بلاول,زرداری کا فیصلہ آج متوقع

اسلام آباد پالیٹکس رپورٹ /معظم رضا تبسم: پاکستان پیپلزپارٹی کا اہم مشاورتی اجلاس آج شام کراچی میں چئیرمین بلاول بھٹو زرداری اور سابق صدر آصف علی زرداری کی زیر صدارت ہوگا ۔ اجلاس میں حکومت سازی کے مرحلے پر مختلف تجاویز پر غور کیا جائیگا۔
پیپلزپارٹی پارلیمنٹرینز کے سیکرٹری جنرل فرحت اللہ بابر نے انکشاف کیا ہے کہ غیر مرئی قوتیں چاہتی ہیں کہ پیپلزپارٹی مرکزی حکومت کا حصہ بنے ، تاکہ پہلی بار اقتدار کے سنگھاسن پر براجمان ہونے جا رہے عمران خان کی حکومتی گاڑی روانی سے چل سکے ۔ فرحت اللہ بابر نے یہ انکشاف بھی کیا ہے کہ پی ٹی آئی سے زیادہ غیر مرئی قوتوں کا دباو ہے کہ پی پی وفاق میں پی ٹی آئی سے اتحاد کرے۔

ویڈیو رپورٹ دیکھنے کےلئے یہاں کلک کریں: زرداری پرعمران سے اتحاد کے لئے دباو، فیصلہ آج متوقع

یاد رہے کہ آصف علی زرداری اور انکی بہن فریال تالپور کیخلاف منی لانڈرنگ کا مقدمہ انتخابات سے قبل ہی بنانے کا عمل شروع کر دیا گیا تھا۔ پیپلزپارٹی کی قیادت ان الزامات کو تسلیم نہیں کر رہی اور عدالتوں میں سامنا کر رہی ہے۔
واضح رہے کہ اپوزیشن نے گذشتہ روز انتخابات میں دھاندلی کیخلاف متحد ہو کر پی ٹی آئی کے علاوہ تمام جماعتوں نے الیکشن کمیشن کے سامنے احتجاج کیا تھا جس کے بعد پیپلزپارٹی کے ایک کارکن راجہ امتیاز کو نعرہ بازی پر گذشتہ رات گرفتار کیا گیا اور دہشتگردی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔
واضح رہے کہ پی ٹی آئی کا ایک اجلاس بھی آج بنی گالا بلایا گیا ہے جس میں یہی معاملہ زیر غور آئیگا۔انتخابات میں اکثریت حاصل کرنے کے باوجود بھی پی ٹی آئی حکومت بنانے میں مسائل کا شکار ہے۔ تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی کو اپنی حکومت بنا تو سکتی مگر پیپلزپارٹی کے بغیر چلا نہیں سکتی ۔
دوسری طرف سوشل میڈیا پر فرحت اللہ بابر کے انکشاف کے بعد پی پی کارکنوں کی جانب سے تحفظات کا اظہار کیا جا رہا ہے