فیس بک پیج سے منسلک ہوں

بم دھماکوں کی مشترکہ تحقیقات :پاکستان کی افغانستان کو پیشکش

اسلام پالیٹکس رپورٹ / معظم رضا تبسم :پاکستان نے افغانستان کو الزام تراشی کے بجائے بم دھماکوں کی مشترکہ تحقیقات کا مشورہ دیا ہے۔
کابل میں ہونیوالے پاک افغان ورکنگ گروپ اجلاس میں اعلیٰ سول اور عسکری حکام پر مشتمل پاکستانی وفد کی سربراہی سیکریٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ نے کی جبکہ افغان وفد کی قیادت نائب وزیر خارجہ حکم خلیل کرزئی نے کی ۔ اجلاس میں دونوں ممالک نے اہم امور پر اتفاق رائے کے لئے بات چیت جاری رکھنے کا فیصلہ کیا ۔ پاک افغان مشترکہ ورکنگ گروپ کے اجلاس کے دوران سیکریٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ نے افغانستان پر زور دیا کہ پاکستان پر الزام تراشی سے اجتناب کیا جائے۔ اجلاس میں پاکستانی حکام نے افغانستان کو بم دھماکوں کی مشترکہ تحقیقات کی پیشکش کی ہے۔

اجلاس کے بعد جاری اعلامیہ کے مطابق انسداد دہشت گردی ،قیام امن سے متعلق ایکشن پلان اور افغان مہاجرین کی واپسی پر بھی بات چیت کی گئی۔ اعلامیہ میں مزید کہا گیاکہ مذاکرات خوشگوار ماحول میں ہوئے اور پاک افغان مشترکہ ایکشن پلان پر مثبت پیشرفت ہوئی۔ ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق اجلاس میں تہمینہ جنجوعہ نے افغان حکام پر دوطرفہ تعاون بڑھانے پر زور دیا۔ ورکنگ گروپ کا آئندہ اجلاس 9 اور 10 فروری کو اسلام آباد میں ہوگا۔