فیس بک پیج سے منسلک ہوں

بینظیر بھٹو شہید کی تصویر ہٹانے کیخلاف پارلیمنٹ میں احتجاج کا اعلان

اسلام آباد(معظم رضا تبسم) پاکستان پیپلزپارٹی پارلیمنٹیرین نے حکومت کی جانب سے بینظیر انکم سپورٹ پروگرام سے بینظیر بھٹو شہید کی تصویر ہٹانے پر پارلیمنٹ میں احتجاج کا اعلان کر دیا- پیپلز پارٹی پارلیمنٹیرین کی سیکرٹری اطلاعات اور رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے بےنظیر انکم سپورٹ پروگرام کے لوگو سے محترمہ بے نظیر بھٹو شہید کی تصویر ہٹانے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے -

نفیسہ شاہ نے کہا ہے کہ نواز لیگ کا یہ عمل بدنیتی پر مبنی ہے اور ثابت کرتا ہے کہ غاصب ضیا کے لاڈلوں کے دل میں آج بھی محترمہ بے نظیر بھٹو شہید کے خلاف بغض اور تعصب ہے ۔ میڈیا آفیس اسلام آباد سے جاری کیئے گئے بیان میں ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے کہا کہ بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام پارلیمنٹ نے محترمہ بے نظیر بھٹو شہید کی ملک ۔آئین اور جمہوریت کیلیئے جدوجہد ۔خدمات اور قربانی کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے پاس کیا تھا ۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف اس پروگرام کو ختم کرنا چاہتے تھے مگر عالمی سطح پر اس ادارے کو فنڈز دینے والے اداروں نے مزاحمت کی ۔ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے کہا کہ اس عمل کے خلاف قومی اسمبلی اور سینیٹ میں بھرپور احتجاج کیا جائے گا-

ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے کہا نواز شریف ضیا کے لاڈلے تھے جبکہ بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کی چیئرپرسن سابق آمر پرویز مشرف کی لاڈلی کو بنایا گیا ہے ۔ ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے کہا کہ محترمہ بینظیر بھٹو شہید کا نام ہٹانے والے خود مٹنے والے ہیں ۔