ٹرمپ دھمکی, وزیراعظم نے کابینہ اجلاس بلا لیا

اسلام آباد:( معظم رضا تبسم ) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے پاکستان بارے تازہ ٹوئیٹر بیان اور پاکستان کی امداد روکنے بارے عندیہ کے بعد وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے منگل کو وفاقی کابینہ کا اجلاس طلب کر لیا ہے جبکہ وزیر خارجہ خواجہ آصف کا کہنا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے پاکستان کی امداد روکنے سے متعلق ٹویٹ پر جلد ردعمل دیں گے- جبکہ ذرائع کے مطابق قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس بھی متوقع ہے حکومت پاکستان اسٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لیکر تفصیلی جواب دیگا-

سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ بہت جلد ٹرمپ کے ٹوئیٹ کا جواب دیں گے، دنیا کو سچائی سے آگاہ کریں گے اور بتائیں گے کہ حقیقت اور افسانے میں کیا فرق ہے۔

واضح رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کی امداد کو بیوقوفی قرار دیا تھا۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ امریکا نے پاکستان کو 15 سال میں 33 ارب ڈالر سے زائد امداد دے کر بے وقوفی کی، پاکستان نے امداد کے بدلے ہمیں جھوٹ اور دھوکے کے سوا کچھ نہیں دیا۔ انہوں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ’پاکستان دہشت گردوں کو محفوظ پناہ گاہ فراہم کرتا ہے اور افغانستان میں دہشت گردوں کو نشانہ بنانے میں معمولی مدد ملتی ہے لیکن اب ایسا نہیں چلے گا۔‘

پیپلز پارٹی کی  سینیٹر و نائب صدر  شیری رحمان نے امریکی صدر کے بیان کو ابہام کا شاخسانہ قرار دیا ہے

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما شاہ محمد قریشی کا کہنا تھا کہ ’پاکستان نے اپنے مفاد کی خاطر آگے بڑھنا ہے چاہے امریکی امداد ملے یا نہ ملے-

ذرائع کے مطابق پاکستان نے ٹرمپ کے بیان پر عالمی برادری کو اپنے جوابی موقف سے آگاہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے اس ضمن میں سفراء اور عالمی برادری کو خطوط لکھے جائیں گے جبکہ پاکستان میں متعین غیرملکی سفراء کو حقائق سے آگاہ کیا جائیگا-