فیس بک پیج سے منسلک ہوں

حدیبیہ پیپر ملز ریفرنس دوبارہ کھولنےکی اپیل مسترد

 اسلام آباد (اللہ داد صدیقی ) سپریم کورٹ نے حدیبیہ پیپر ملز ریفرنس دوبارہ کھولنےکی نیب کی اپیل مستردکردی۔جسٹس مشیر عالم نےنیب کی اپیل مسترد کرنےکا فیصلہ پڑھ کر سنایا جبکہ جسٹس قاضی فائز عیسیٰ اور جسٹس مظہر عالم میاں خیل بھی فیصلے کے وقت موجود تھے۔ تینوں ججز نے نیب کی اپیل مسترد کرنے کا متفقہ فیصلہ دیا-

قومی احتساب بیورو (نیب) کی جانب سے شریف خاندان کے خلاف دائر حدیبیہ پیپر ملز ریفرنس کو دوبارہ کھولنے سے متعلق لاہور ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں دائر اپیل پر فیصلہ سناتے ہوئے عدالت عظمیٰ نے اسے مسترد کردیا اور کہا کہ تحریری فیصلہ بعد میں جاری کیا جائے گا۔

سماعت کے دوران نیب کی جانب سے دلائل پیش کیے جانے پر جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے نیب کے وکیل عمران الحق سے استفسار کیا کہ شریف خاندان لاہور ریفرنس ختم کروانے گئی تو نیب جاگی، کیا کیس دوبارہ کھولنا دوبارہ چلانے میں نہیں آئے گا؟۔ ان کا کہنا تھا کہ یہاں آپ دوبارہ اپنے ملزمان کے خلاف تحقیقات مانگ رہے ہیں جبکہ کیس کے میرٹس ہم دیکھ چکے ہیں۔

دوران سماعت نیب کے وکیل نے استدعا کی کہ لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے میں خلا ہے ،انصاف کے تقاضے پورے کرنے کے لئے ریفرنس کھولنے کی اجازت دی جائے۔

جسٹس مشیر عالم نےریمارکس دیے ہم ریفرنس نہیں اپیل سن رہے ہیں ،آپ اپیل دائر کرنے میں تاخیر پر عدالت کو مطمئن کریں،اسحاق ڈار کو نیب نے فریق ہی نہیں بنایا، اگر اسحاق ڈار کے بیان کونکال دیاجائے توان کی حیثیت ملزم کی ہوگی۔ جسٹس قاضی فائز عیسٰی نے ریمارکس دیے کہ جس بیان پر آپ کیس چلا رہے ہیں وہ دستاویز لگائی ہی نہیں۔