نادرا کا ڈیٹا بیس نہ ملنے پر بائیو میٹرک ووٹنگ کا پائلٹ پراجیکٹ ناکام

اسلام آباد پالیٹکس مانیٹر:ضمنی الیکشن میں نادرا سے ڈیٹا نہ ملنے کے باعث بائیومیٹرک مشینوں کے استعمال کا پائلٹ منصوبہ دھرے کا دھرہ رہ گیا۔

رپورٹس کے مطابق الیکشن کمیشن نے سندھ اسمبلی کے حلقے پی ایس 114 میں 9 جولائی کو ہونے والے ضمنی الیکشن میں بائیو میٹرک مشینوں کے استعمال کا اعلان کیا تھا لیکن نادرا سے ڈیٹا نہ ملنے کے باعث بائیو میٹرک مشینوں کے استعمال کا پائلٹ منصوبہ دھرے کا دھرہ رہ گیا۔ بائیو میٹرک مشینوں کا پائلٹ منصوبہ ناکام ہونے کے بعد الیکشن کمیشن نے پی ایس 114 کے ضمنی الیکشن میں 4 ٹیکنالوجیز استعمال کرنے کا فیصلہ کیا ہے، جن میں ایس ایم ایس، آر ایم ایس، جی آئی ایس اور آر ٹی ایس استعمال ہیں۔

حکام الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ حلقہ کے 292875 رجسٹرڈ ووٹرز ایس ایم ایس پر ووٹ کی تفصیلات حاصل کر سکتے ہیں، ووٹرز حلقے کے تمام 92 پولنگ اسٹیشنوں کی تفصیلات گوگل میپ پر دیکھ سکتے ہیں، ریٹرننگ افسر رزلٹ مینجمنٹ سسٹم کے ذریعے انتخابی نتائج مرتب کریں گے جبکہ پریزائیڈنگ افسران موبائل فون کے ذریعے براہ راست نتائج الیکشن کمیشن کو ارسال کریں گے۔