حیسن نواز کے جے آئی ٹی پر تحفظات کی سوموار کو سماعت

اسلام آباد(اللہ داد صدیقی/نیوز رپورٹر)چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار نے وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کے صاحبزادے حسین نواز کی جانب سے مشترکہ تحقیقاتی کمیٹی ( جے آئی ٹی )کے دو ممبران عامر عزیزاور بلال رسول پر اعتراضات کے حوالہ سے دائر کی گئی متفرق درخواستوں کی سماعت کے لئے جسٹس اعجاز افضل خان کی سربراہی میں جسٹس شیخ عظمت سعید اور جسٹس اعجازالاحسن پر مشتمل تین رکنی خصوصی بنچ تشکیل دے دیا ہے ، جو سوموار 29مئی کو سماعت کرے گا، اس سلسلہ میں اٹارنی جنرل اور درخواست گزار حسین نواز کو نوٹسز جاری کردیئے گئے ہیں،یاد رہے کہ حسین نواز نے منگل 23مئی کو مشترکہ تحقیقاتی ٹیم میں شامل اسٹیٹ بینک کے نمائندہ عامر عزیزاور سیکورٹیزاینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان کے نمائندہ بلال رسول کے خلاف دائر کی گئی درخواستوں میں تحفظات کا اظہار کر تے ہوئے موقف اختیار کیا ہے کہ ان دونوں کے سابق آرمی چیف پرویزمشرف اور پاکستان تحریک انصاف کی قیادت سے تعلقات ہیں،بلال رسول سابق گورنرپنجاب میاںمحمد اظہر کے بھتیجے ہیں ،اس لیے ان کی جگہ پر اسٹیٹ بنک اور سیکورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن کے نئے نمائندوں کو جے آئی ٹی میں شا مل کیا جائے،اس حوالہ سے ہمارا موقف سننے کے لئے ہماری درخواست کو جے آئی ٹی عملدرآمد کے لئے قائم کئے گئے تین رکنی خصوصی بینچ کے سامنے سماعت کے لیے مقرر کیا جائے۔

ق لیگ کے انتخابی نااہل قرار پائے امیدوار کی درخواست خارج

عدالت عظمیٰ نے قومی اسمبلی کے حلقہ، این اے 145اوکاڑہ سے عام انتخابات 2013میں الیکشن کمیشن کی جانب سے پاکستان مسلم لیگ ق کے امیدوار و سابق رکن قومی اسمبلی ،سیدگلزارسبطین کے محکمہ انہارکا نادہندہ ہونیکی بناء پرکاغذات نامزدگی مسترد  کرنے کے فیصلہ کے کیخلاف دائر اپیل خارج کرتے ہوئے انہیں موزوں فورم سے رجوع کرنے کی ہدایت کی ہے ،جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں قائم دو رکنی بنچ نے جمعہ کے روز  اپیل کی سماعت کی تو اپیل کنندہ کے وکیل نے دلائل دیتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ عام انتخابات سے قبل ان کے موکل گلزار سبطین کے کاغذات نامزدگی محکمہ انہار کا ڈیفالٹر ہونے کی بنا پر مسترد ہوئے تھے ، محکمہ انہار کے تمام واجبات ادا کردیئے گئے ہیں ،ان کے موکل کی نااہلی ختم کرنے کا حکم دیا جائے ،واجبات کی ادائیگی کے بعد نااہلی کاجواز نہیں رہا ہے تاہم فاضل عدالت نے اپیل خارج کر تے ہوئے قرار دیاکہ اپیل گزار آئندہ انتخابات میں متعلقہ فورم سے رجوع کرے،یا د رہے کہ سید گلزار سبطین کے 2013کے عام انتخابات میں محکمہ انہار کا نادہندہ ہونے کی بنا پر کاغذات نامزدگی مسترد کردیئے تھے-