بچوں کیخلاف فیصلہ آیا تو وزیراعظم کیخلاف ہوگا

اسلام آباد پالیٹکس رپورٹ/ اللہ داد صدیقی: سپریم کورٹ میں سینیٹر ڈاکٹر بابر اعوان نے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کہاکہپانامہ کے فیصلے پر پاکستانی قوم صبر کررہی ہے۔ فیصلہ آنے کے بعد قوم شکر ادا کریگی وزیر اعظم کی نااہلی دیوار پر لکھی ہوئی ہے۔ پانامہ کا فیصلہ نواز شریف کے بچوں کے خلاف آیا تو وہ وزیر اعظم کے خلاف ہی ہوگا۔ نواز شریف کے بچوں نے کمائی والد کے وزیر اعظم بننے کے بعد کی۔ جس وزیر نے کہا کہ قوم نواز شریف کے خلاف فیصلہ قبول نہیں کریگی۔وہ اندرون خانہ چھوٹے بھائی کو موقعہ دلانا چاھتا ہے۔ وہ وزیر چاھتا ہے کہ نواز شریف سیاست سے نااہل کروانا چاھتا ہے۔آرٹیکل 62 اور 63 کی اصل تشریح پانامہ کیس میں ہوگی۔ پانامہ کا فیصلے میں 62 اور 63 کی تشریح سرجیکل ہوگیاس سے قبل 62 اور 63 کی تشریح نظریہ ضرورت اور آدھی ھومیو پیتھک تھی۔ اصلی اپوزیشن فوج میڈیا اور پوری قوم میرٹ اور انصاف کے فیصلے کے انتظار میں کررہی ہے ۔ پانامہ ٹرائل آف دی سنچری اور ججمنٹ آف سنچری ہوگی۔