افغانستان سے انخلاء ڈھائی برس میں، اوباما نے منصوبہ اعلان کردیا

اسلام آبادپالیٹکس رپورٹ : امریکی صدر باراک اوباما نے افغانستان سے انخلاء کے ایک منصوبے کا اعلان کیا جس کے تحت رواں برس کے آخر میں غیرملکی افواج کے انخلاء کے بعد وہاں تقریبا دس ہزار امریکی فوجی بدستور تعینات رہیں گے۔ اوباما نے اتوار کو افغانستان کا غیر اعلانیہ دورہ بھی کیا تھا۔ وہاں انہوں نے بگرام ایئربیس پر امریکی فوجیوں سے ملاقات کی تھی۔ اُس موقع پر انہوں نے کہا تھا کہ رواں برس غیرملکی سکیورٹی فورسز کے انخلاء کے بعد تعینات کیے جانے والے فوجیوں کی تعداد کے بارے میں فیصلہ جلد سامنے آ جائے گا۔ افغانستان میں امریکی فوجیوں کی محدود تعداد کی تعیناتی افغان حکومت کے ساتھ ایک سکیورٹی معاہدے سے مشروط ہے۔ اس معاہدے کے تحت غیرملکی فورسز کے انخلاء کے بعد امریکی فوجیوں کی محدود تعداد افغانستان میں قیام کر سکتی ہے جن کا کام مقامی فورسز کی تربیت اور انسدادِ دہشت گردی کے مشن کو چلانا ہو گا۔ افغان صدر حامد کرزئی یہ کہتے ہوئے امریکا کے ساتھ سکیورٹی معاہدے پر دستخط سے انکار کر چکے ہیں یہ کام آئندہ صدر کرے گا۔